آیوڈین کی کمی کی 10 ایسی نشانیاں جنہیں نظر انداز نہیں کرنا چاہیے

Posted by

آیوڈین ہمارے جسم کے لیے ایک انتہائی ضروری منرل ہے جو ہمارے تھائی رائیڈ گلانڈ کو ٹھیک طریقے سے فعال رکھنے میں بُنیادی کردار ادا کرتا ہے، اور تھائی رائیڈ گلانڈ کی خرابی ہماری صحت پر بُری طرح اثر انداز ہوتی ہے۔ اس آرٹیکل میں ہم جانیں گے کہ اگر جسم میں آیوڈین کی کمی ہوجائے تو اُس کی کیا علامات ہیں۔

نمبر 1 بالوں اور جلد کا خراب ہونا

بالوں کا بہت زیادہ گرنا اور جلد پر خارش اور خُشکی کا پیدا ہونا بہت سی وجوہات کی وجہ سے ہوسکتا ہے مگر آیوڈین کی کمی بھی اس کی ایک بڑی وجہ ہے کیونکہ یہ منرل جلد پر نمی برقرار رکھنے میں مدد کرتا ہے ، زخموں کے بھرنے کا عمل تیز کر دیتا ہے اور سکن پر جھریوں کے عمل کو سُست بناتا ہے۔

نمبر 2 زیادہ سردی لگتی ہے

C:\Users\Zubair\Downloads\snow-cold-winter-woman-weather-season-648821-pxhere.com.jpg
Photo by form PxHere

موسم خُوشگوار ہے اور باقی سب دوست احباب ٹی شرٹس وغیرہ میں نارمل بیٹھے باتیں کر رہے ہیں مگر آپ کو سردی لگ رہی ہے تو یہ نشانی ہوسکتی ہے جسم میں آیوڈین کی کمی کی کیونکہ اس منرل کی کمی ہمارے جسم کے میٹابولک ریٹ کو سست کر دیتی ہے جس کے نتیجے میں جسم گرم رہنے کے لیے پُوری توانائی مہیا نہیں کرپاتا۔

نمبر 3 اچانک موٹاپا پیدا ہونا

C:\Users\Zubair\Downloads\fat-4557991_1920 (2).png

میٹابولیزم کی سُستی سے صرف سردی ہی زیادہ نہیں لگتی بلکہ یہ ہمیں موٹا بھی بناتا ہے، یہ جسم کو زیادہ کیلوریز استعمال کرنے سے روک دیتا ہے اور چونکہ ہم اپنی روزانہ کی عام خوراک کھاتے رہتے ہیں چنانچہ اس میں موجود توانائی جسم میں چربی کی صُورت میں سٹور ہونا شروع کر دیتی ہے۔

نمبر 4 تھکاؤٹ اور کمزوری

C:\Users\Zubair\Downloads\smiley-1431335_1920.png

اگر آپ بغیر کسی وجہ کے تھکاؤٹ اور کمزوری محسوس کرنا شروع ہوگئے ہیں تو یہ بھی آیوڈین کی کمی کی ایک نشانی ہو سکتی ہے کیونکہ اگر تھائی رائیڈ گلانڈ پُورے ہارمون پیدا نہیں کر رہا تو یہ نشانیاں ظاہر ہوتی ہیں۔

نمبر 5 یاداشت اور سیکھنا

C:\Users\Zubair\Downloads\memory-4894438_1920.jpg

تھائی رائیڈ ہارمونز کی کمی ہماری یاداشت کو بُری طرح متاثر کرتی ہے اور ان ہارمونز میں یہ خرابی عام طور پر آیوڈین کی کمی کی وجہ سے واقع ہوتی ہے اسی لیے جن بڑوں یا بچوں میں یہ کمی ہوجائے اُنہیں سیکھنے اور یاد رکھنے میں دُشواری ہونا شروع ہو جاتی ہے۔

نمبر 6 ڈپریشن اور اینگزائیٹی

File:Depressed (4649749639).jpg
Sander van der Wel from Netherlands, CC BY-SA 2.0, via Wikimedia Commons

عام طور پر سمجھا جاتا ہے کہ یہ دونوں بیماریاں نفسیاتی مسائل کی وجہ سے پیدا ہوتی ہیں مگر یہ ایک غلط خیال ہے کیونکہ میڈیکل سائنس کا ماننا ہے کے ڈپریشن اور اینگزائیٹی کا تھائی رائیڈ گلانڈ کے ساتھ گہرا تعلق ہے اس لیے ایسی صُورت میں ڈاکٹر سے رابطہ کر کے ضرور جان لینا چاہیے کہ کہیں آیوڈین کی کمی تو نہیں ہو رہی۔

نمبر 7 گلے کی سوجن

جب ہماری خوراک ہمارے جسم کو مناسب آیوڈین مہیا نہ کرے تو ہمارے گلے کے نیچے موجود تھائی رائیڈ گلانڈ اپنا کام ٹھیک طریقے سے نہیں کر پاتا اور خوراک کے ذرات کو اپنے اندر جذب کرنا شروع کر دیتا ہے جس سے یہ سائز میں بڑا ہو جاتا ہے اور ہمارے گلے میں سوزش پیدا کر دیتا ہے۔

نمبر 8 حاملہ خواتین اور بچہ

اس منرل کی کمی زچہ و بچہ دونوں کو متاثر کرتے ہیں کیونکہ اگر ماں میں یہ کمی واقع ہو تو پیدا ہونے والے بچے کی دماغ کی نشوونما متاثر ہوتی ہے اور بچے کے ضائع ہونے کا خدشہ بڑھ جاتا ہے اس لیے حاملہ خواتین کو اپنی خوراک پر توجہ دینے کی اشد ضرورت ہوتی ہے۔

نمبر 9 دل کی سُست رفتار

آیوڈین کی کمی دل کی بیماریوں کا باعث بھی بنتی ہے کیونکہ اس سے دل کی دھڑکن نارمل سے کم ہوجاتی ہے جس سے بندہ بیماری محسوس کرنا شروع کردیتا ہے۔

نمبر 10 قبض

ہائپرتھائی رائیڈ کئی اور بیماریوں کے ساتھ ہمارے نظام انہظام کو بھی شدید متاثر کرتا ہے اور معدے اور بڑی آنت کو سُست کردیتا ہے اسی لیے کئی افراد آیوڈین کی کمی میں قبض محسوس کرتے ہیں۔