قد نکالتے بچوں کو یہ عادات لازمی سیکھائیں تاکہ اُن کے قد میں تیزی سے اضافہ ہو

Posted by

اکثر والدین اپنے بچوں کے قد کے بارے میں پریشان رہتے ہیں، کیونکہ معاشرے میں کسی شخص کی اونچائی کو جسمانی نشوونما سے جوڑ کر دیکھا جاتا ہے اسی وجہ سے لمبے قد والا شخص توجہ اور تعریف کا مرکز بن جاتا ہے اسی لیے لوگ چاہتے ہیں کہ اُں کے بچے 6 فٹ سے زیادہ لمبے ہوں اور اگر آپ بھی بچے کا قد بڑھانا چاہتے ہیں تو اسے قد بڑھانے کے لیے کُچھ عادات ضرور سکھائیں کیونکہ ان عادات کے حامل بچے کا قد بہت تیزی سے بڑھتا ہے۔

قد بڑھانے والی عادات: کسی بھی بچے کا قد اُس کی جسمانی نشوونما اور خاندان کے جینات پر منحصر ہوتا ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ خوراک اور جسمانی سرگرمیاں بھی قد کے بڑھانے میں اہم کردار ادا کرتی ہیں اور اگر خوراک میں کمی کوتاہی ہو تو بچے کا قد پُوری طرح بڑھ نہیں پاتا اور ایک اندازے کے مطابق پاکستان کی 70 فیصد سے زیادہ آبادی خوراک میں کمی کی وجہ سے نشوونما میں کمی کا شکار ہے اس لیے اپنے بچوں کو متوازن خوراک کھانے کی عادت ڈالیں اور انہیں فاسٹ فوڈ اور جنک فُوڈ سے پرہیز کرنا سیکھائیں اور ان کی خوراک میں دُودھ کو لازمی شامل کریں۔

قد لمبا کرنے والے کھانے: جس وقت بچے قد نکال رہے ہوتے ہیں تو اُن کے جسم کو وٹامنز اور منرلز کے ساتھ ساتھ دیگر غذائی اجزا کی بھی ضرورت ہوتی ہے اور ایسے موقع پر اُس کی خوراک میں دُودھ، دالیں، سبز پتوں والی سبزیاں، تازہ پھل اور گوشت وغیرہ شامل کرنا بہت ضروری ہوتا ہے تاکہ اُسے جسم کی ضرورت کے مطابق معدنیات اور وٹامنز وغیرہ ملتے رہیں اور جسم کا قد خوراک میں کمی کے باعث بڑھنا رُک نہ جائے۔

اناج کی اہمیت: ایسا اناج جسے ریفائن نہ کیا گیا ہو بچوں کے قد بڑھانے میں انتہائی مدد گار ثابت ہوتا ہے کیونکہ اس میں پروٹین، کیلشیم، آئرن اور وٹامن بی کی بڑی مقدار شامل ہوتی ہے اور یہ تمام غذائی اجزا قد کو لمبا کرنے کا باعث بنتے ہیں۔

ورزش کی اہمیت: آج کل بچے ویڈیو گمیز اور موبائل فون پر گیمز کھیلنے کو ترجیح دیتے ہیں اور جسمانی سرگرمیوں سے دُور ہی رہتے ہیں۔ ماہرین اس بات پر دو رائے رکھتے ہیں کُچھ کے مطابق ورزش قد بڑھانے میں مدد گار ثابت ہوتی ہے اور کُچھ کے نزدیک قد کے بڑھنے میں ورزش کا کوئی کردار نہیں ہوتا لیکن ایک بات جس پرسب متفق ہیں وہ یہ ہے کہ ورزش بچوں کو جسمانی طور پر اور اندرونی طور پر مضبوط بناتی ہے اور اس سے جسم میں خوراک سے توانائی جذب کرنے کی صلاحیت میں بھی اضافہ ہوتا ہے اور خوراک سے حاصل ہونے والی توانائی قد کے بڑھنے میں مدد دیتی ہے اس لیے بچوں کو ورزش کرنے کی عادت لازمی ڈالیں تاکہ اُن کے طرز زندگی میں بہتری آئے۔

یوگا: یہ جسم اور دماغ کی ایسی ورزش ہے جو بچوں میں قد کے بڑھانے میں انتہائی مدد گار ثابت ہوتی ہے کیونکہ یوگا کے دوران جسم کو سٹریچ کرنا اور اس ورزش سے جسم کی لچک میں اضافہ ہوتا ہے اور اس سے جسم میں خون کی گردش بہتر ہوتی ہے اور جسم کے اندرونی اعضا کو تقویت ملتی ہے اور یہ چیزیں قد کے بڑھنے میں مددگار ثابت ہوتی ہیں اس لیے اپنے بچوں کو یوگا کی طرف راغب کریں اور اس کام کے لیے آپ یو ٹیوب سے یوگا کرنے کا طریقہ سیکھ سکتے ہیں۔

کھیل کود: بچے کھیل کود پسند کرتے ہیں اور یہ چیز ان کے لیے انتہائی فائدہ مند بھی کیونکہ اس سے جہاں قد کے بڑھنے میں مدد ملتی ہے وہاں سپورٹس میں اچھی کارکردگی ان کے مسقبل پر بھی بہت اچھے اثرات مرتب کرتی ہے اس لیے بچوں کو کھیل کود سے بلا وجہ منع نہ کریں اور گمیز میں ان کی حوصلہ افزائی کرتے رہیں اور خاص طور پر انہیں تیراکی، باسکٹ بال، اور فٹ بال جیسی گیمز جس میں دوڑ شامل ہو لازمی کھیلنے کے لیے کہیں۔

نوٹ: اگر آپ کے بچے کا وزن کم ہے یا اُس کی نشوونما میں کمی ہے اور وہ کمزور ہے تو اُسے لازمی ڈاکٹر سے چیک کروائیں تاکہ وہ ان مسائل کی اصل وجہ کو سمجھ کر آپ کی بہتر رہنمائی کر سکے۔