میڈیکل آسٹرالوجی کے مُطابق چاند کی مختلف تاریخوں میں مُون باتھ لینے کے دلچسپ فائدے

Posted by

انسان کا نظام شمسی کیساتھ گہرا تعلق ہے اور اس نظام کی نقل و حرکت انسان پر بہت سے طریقوں سے اثر انداز ہوتی ہے اور جدید سائنس کا کہنا ہے کہ یہ انسان کی صحت پر بھی گہرے اثرات مرتب کرتی ہے جیسے سُورج اور چاند کی روشنی ہمارے جسم کے لیے وٹامن ڈی مہیا کرنے کا بڑا ذریعہ ہیں۔

چاند کی روشنی سُورج سے مستعار ہے اور جہاں سُورج کی روشنی وٹامن ڈی مہیا کرتی ہے اسی طرح چاند کی روشنی بھی وٹامن ڈی کیساتھ نائٹریک آکسائیڈ بھی مہیا کرتی ہے جس سے خُون کی روانی ریگولیٹ ہوتی ہے اورہائی بلڈ پریشر میں کمی واقع ہوتی ہے۔

اس آرٹیکل میں ہم قدیم اور جدید ماہرین طب کی رائے میں مُون باتھ لینے سے صحت کو کیا فائدے حاصل ہوسکتے ہیں ذکر کریں گے جس سے آپ چاند کے مزید قریب ہونا چاہیں گے۔

G:\Pics Sharing\moon-2134881_1280.jpg

لفظ "مُون باتھ” دور جدید کی ٹرمینالوجی ہے لیکن چاند کی روشنی میں بیٹھنا انسان کا ازل سے ہی طرز عمل رہا ہے اور قدیم ماہرین طب کے مُطابق چاند کی روشنی کی تاثیر ٹھنڈی، سکون بخش اور جسم و دماغ کو پُرسکون بنانے والی خُوبیوں پر مشتعمل ہے۔

دور جدید کے ماہرین کا کہنا ہے کہ چاند کی روشنی سُورج کی روشنی کی ریفلیکشن ہونے کے باعث اس میں سُورج کی روشنی جیسے مضر اثرات موجود نہیں ہوتے اور یہ روشنی جسم کے بڑھے ہُوئے درجہ حرارت کو کم کرنے کا باعث بنتی ہے اور یہ غُصہ پیدا کرنے والے ہارمونز پر اثر انداز ہوتی ہے اور ہائپر ٹینشن، درد شقیقہ، جلد کی بیماریوں جیسے چھپاکی اور سکن ریش اور سوزش میں آرام پہنچانے کا باعث بنتی ہے۔

پہلے زمانے میں سُورج اور چاند کی عبادت اس لیےبھی کی جاتی تھی کیونکہ انکی روشنی سے وٹامن ڈی حاصل ہوتا تھا اور یہ وٹامن خواتین کے امراض ٹھیک کرنے اور فرٹلیٹی میں انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہےاور قدیم ماہرین کا ماننا ہے کہ چاند کا تعلق خواتین کے دماغ کے بائیں حصے سے ہوتا ہے جس سے وہ ان کے ہارمونز پر گہرا اثر ڈالتا ہے خاص طور پر اُن ہارمونز پر جو نسوانی افزائش اور ماہواری سائیکل کو کنٹرول کرتے ہیں۔

میڈیکل آسٹرالوجی میں خواتین کے پیچوری گلانڈ (Pituitary Gland) کا چاند کے ساتھ گہرا تعلق مانا جاتا ہے اوریہ گلانڈ خواتین کے جسم کی گروتھ اور مردوں میں ٹیسٹو سٹیرون کی پیداوار بڑھانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

مُون باتھ کیسے اور کب لینا چاہیے

مُون باتھ لینے کا کوئی صحیح یا غلط طریقہ نہیں ہے آپ اسے چاند کی کسی بھی تاریخ کو لے سکتے ہیں لیکن میڈیکل آسٹرالوجی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ چاند کی مختلف تاریخوں پر مُون باتھ لینے سے مختلف فائدے حاصل ہوتے ہیں جو درجہ ذیل ہیں۔

فُل مون باتھ

C:\Users\Zubair\Downloads\tree-sky-sun-sunset-night-morning-91283-pxhere.com.jpg
Photo by form PxHere

پُورے چاند کی رات کو چاند کی انرجی اپنے عروج پر ہوتی ہے اور یہ انرجی آپ کی فزیکل پرابلمز اور ایموشنل تکلیفوں میں راحت کا باعث بنتی ہے اس رات کو انسانی جسم میں منرلز کو جذب کرنے کی صلاحیت تیز ہوجاتی ہے اور اگر آپ ایسے میں چاند کی روشنی میں بیٹھیں گے تو اپنے آپ کو ریلکیس اور زیادہ پُرسکون اور جذباتی طور پر مغلوب محسوس کریں گے۔

نیو مُون باتھ

File:(1)New moon-1.jpg
Sardaka / CC BY-SA

پہلی تاریخ کا چاند کلینزینگ خوبیوں کا حامل مانا جاتا ہے اور چاند کی اس تاریخ میں چاند سے خارج ہونے والی انرجی جسم کے فاضل مادوں کو خارج کرنے اور ہارمونز لیول کو نارمل کرنے میں مُفید مانی جاتی ہے۔

نئے چاند کی روشنی میں مُون باتھ کرنا جلد کی الرجی، معدے کی تیزابیت، ہائپر ٹینشن میں آرام اور غُصے کو ٹھنڈا کرنے کا باعث بنتی ہے۔

2 سے 13 تک کا چاند

File:HolgerVaga - Waning Moon IV (by).jpg
Holger Vaga from Tallinn, Estonia / CC BY

میڈیکل آسٹرالوجی میں ویکسینگ مُون کی روشنی توانائی اور افزائش کو ظاہر کرتی ہےاورمانا جاتا ہے کہ ان راتوں میں چاند کی روشنی میں بیٹھنے سے جسم کو طاقت اور قُوت حاصل ہوتی ہے اور یہ قوت مدافعت کو مضبوط بناتی ہے اور جسم میں ولولہ اور سنسنی خیزی پیدا کر سکتی ہے۔

چودہویں کے بعد کا چاند

وینینگ مُون یعنی چاند کی 14 تاریخ کے بعد چاند سے خارج ہونے والی انرجی دماغ سے منفی خیالات کو ختم کرنے اور صحت کو نقصان پہنچانے والے جذبات کو خارج کرنےکا باعث مانی جاتی ہے اور ان تاریخوں میں مُون باتھ دماغ کو پُرسکون اور فزیکل انرجی کو بحال کرنے میں مُفید سمجھا جاتا ہے۔