پاکستان کی سب سے خوبصورت وادی جہاں عقل حیرت زدہ رہ جاتی ہے

Posted by

جغرافیائی لحاظ سے پاکستان جیسا خوبصورت ملک دُنیا میں کوئی دُوسرا نہیں ہے اور اگر آپ فلک بوس پہاڑ، دُودھیا دریا، اور سبز پوش وادیوں کو دیکھنے کے شوقین ہیں تو پاکستان جیسا کوئی اور مُلک آپ کو دُنیا کے نقشے پر نہیں ملے گا کیونکہ یہاں 7 ہزار میٹر سے اُونچے ان گنت پہاڑ ہیں، سیکنٹروں وادیاں ہیں اور اس کے شمالی علاقہ جات میں ہر گلی کا اپنا دریا ہے جس کا شفاف دُودھیا پانی دیکھنے والی آنکھ کو تسکین اور سکون بخشتا ہے۔

اس آرٹیکل میں آج آپ کو پاکستان کی سب سے خوبصورت وادی کا تعارف اور تصویری سیر کروائی جائے گی۔ ویسے تو پاکستان کی سب ہی وادیاں ایک سے بڑھ کر ایک ہیں لیکن انٹرنیٹ پر سیاحوں نے اس خاص وادی کو سب سے زیادہ ریٹینگ دے رکھی ہے تو آئیے چلتے ہیں اور جانتے ہیں کہ یہ وادی کہاں ہے اور اسکا کیا نام ہے۔

منی مارگ

File:Minimarg, Kashmir.jpg
Muhammadyahyaqureshi, CC BY-SA 3.0, via Wikimedia Commons

پاکستان کے صوبے گلگت بلتستان میں استور ڈسٹرکٹ سے 78 کلومیٹر کے فاصلے پرموجود منی مارگ آزاد کشمیر کا ایک انتہائی خوبصورت گاؤں ہے جسے منی مارگ کہا جاتا ہے۔ یہ گاؤں چلم چوکی چیک پوسٹ سے تقریباً 36 کلومیٹر کے فاصلے پر ساؤتھ کی طرف بُرزل نالے کے ساتھ آباد ہے اور یہاں تک جانے کے لیے استور سے ایک سڑک جو کہ بُرزل پاس سے ہوتی ہُوئی گزرتی ہے جاتی ہے۔ یہ گاؤں سطح سمندر سے 2 ہزار 8 سو 44 میٹر کی بُلندی پر قائم ہے جہاں جانے کے لیے عام طور پر جیپ وغیرہ کا استعمال کیا جاتا ہے۔

File:Heaven on earth Minimarg, Kashmir.jpg
Muhammadyahyaqureshi, CC BY-SA 3.0, via Wikimedia Commons

سن 1947 اور 48 میں اس پہلی کشمیر جنگ کے دوران اس گاؤں کو گلگت سکاوٹس اور جموں اینڈ کشیر کی سٹیٹ فورس جیسے ٹائیگر فورس کہا جاتا ہے نے فتح کیا اور یہاں کا کنٹرول سنبھالا۔ اس علاقے کے لوگ اپنی انتہائی خوبصورت مادری زبان بولتے ہیں جسے شینا کہا جاتا ہے۔ منی مارگ میں جولائی کا مہینہ سب سے گرم تصور کیا جاتا ہے جب یہاں کا درجہ حرارت دن کے اوقات میں 19 ڈگری تک گرم ہوتا ہے اور یہاں کا سب سے سرد مہینہ جنوری ہے جب یہاں کڑاکے کی سردی پڑتی ہے اور درجہ حرارت منفی 18 ڈگری سے بھی نیچے گر جاتا ہے۔

File:Minimarg Kashmir.jpg
Nehanasim, CC BY-SA 4.0, via Wikimedia Commons

یہاں کے رہنے والے زیادہ تر کھیتی باڑی کرتے ہیں اور چونکہ سردی کے موسم میں یہاں رہنا انتہائی دشوار ہو جاتا ہے اس لیے یہاں کے لوگ پاکستان کے دُوسرے علاقوں میں جا کر کاروبار اور محنت مزدوری کرتے ہیں۔ اس علاقے میں رب کائنات نے ایسے پودوں کو پیدا کیا ہے جو انسانی صحت کے لیے کئی خوبیاں رکھتے ہیں اور بہت سی بیماریوں میں شفا دیتے ہیں اسی لیے یہاں کے لوگ زیادہ تر ان جڑی بوٹیوں کو فروخت کر کے آمدن حاصل کرتے ہیں اور اسکے علاوہ یہاں آلو کی فصل بھی کاشت کی جاتی ہے جو اس علاقے کے لوگوں کی آمدن کا ایک بڑا ذرئیعہ ہے۔

File:Minimarg lake.jpg
Naveed Ahmed 1979, CC BY-SA 4.0, via Wikimedia Commons

اگر آپ منی مارگ کی سیاحت کرنا چاہتے ہیں تو قراقرم ہائی وے سے چلاس کے بعد استور جانے والی سڑک پر آپ کو استور جانا پڑے گا اور وہاں سے منی مارگ کے لیے کوئی ایسی گاڑی حاصل کرنی پڑے گی جو فور بائی فور ہو۔ ویسے لوگ اپنی عام گاڑیوں میں بھی اس علاقے کی طرف جاتے دیکھائی دیتے ہیں لیکن بعد میں اپنا یہی تجربہ بیان کرتے ہیں کہ فور بائی فور گاڑی ہی بہتر رہتی ہے۔

File:Domail Minimarg.jpg
Fadi871, CC BY-SA 4.0, via Wikimedia Commons

منی مارگ میں پاکستان آرمی کا زبردست کنٹرول ہے اور اگر آپ یہاں رات گزارنا چاہتے ہیں تو آپ کو استور سے این او سی لینا پڑے گا یا کسی ایسے آرمی آفیسر سے سفارش حاصل کرنی پڑے گی جو آپ کو جانتا ہو اور یہاں آپ کے قیام کے لیے سفارش کر دے لیکن دن کے اوقات میں اسے دیکھ کر اگر آپ واپس آ جائیں تو پھر آپ کو کسی کی اجازت کی ضرورت نہیں۔

File:Chilling in Minimarg, Kashmir.jpg
Muhammadyahyaqureshi, CC BY-SA 3.0, via Wikimedia Commons

منی مارگ کو دیکھنے والے اپنے تجربے میں یہی بتاتے ہیں کہ یہ دُنیا کی سب سے خوبصورت وادی ہے جہاں دل بلا وجہ مچلتا ہے اور جذبات بے قابو ہوتے ہیں اور انسان قدرت کے اس عظیم شاہکار کو دیکھتا ہی رہ جاتا ہے۔ اگر آپ نے منی مارگ کی سیر اب تک نہیں کی اور پاکستان کے شمالی علاقہ جات کی سیاحت کرنا چاہتے ہیں تو اس وادی کو لازمی دیکھنے جائیں جہاں گرمیوں میں گرمی نہیں بہار کا موسم ہوتا ہے اور خوبصورت پھول کھلتے ہیں جو دیکھنے والوں کو پھر کبھی نہیں بھولتے۔

Feature Image Preview Credit: Mazhar Nazir, CC BY-SA 4.0, and Nehanasim, CC BY-SA 4.0, via Wikimedia Commons