نزلہ زکام کھانسی کو بھُول جائیں کیونکہ یہ 7 قہوے آپ کی قوت مدافعت کو پہلوان بنا دیں گے

Posted by

موسم کی سختی چاہے گرمی کی صُورت میں ہو یا سردی کی  تکلیف دہ نہ ہو تو کسے پسند نہیں خاص طور پر پاکستان میں جب گرمی کا موسم آتا ہے تو ٹھنڈے مشروبات اور ٹھندے پانی سے نہانا اور کُھلی فضا میں رہنا طبیعت کو باغ باغ کردیتا ہے اسی طرحاُن علاقوں میں جہاں موسم گرما میں  شدید گرمی پڑتی ہے وہاں سردی کے موسم کا سارا سال انتظار کیا جاتا ہے اور جب سردی آتی ہے تو دل موج مستی کرنے کو چاہتا ہے اور بندہ بے احتیاطی کر بیٹھتا ہے جس سے موسم کی بیماریاں جیسے نزلہ، زکام، کھانسی، بخار وغیرہ میں مُبتلا ہو جاتا ہے۔

دل جب موج میں ہو اور طبیعت ساتھ نہ دے تو بھی سارا مزہ خراب ہوجاتا ہے اسی لیے اس آرٹیکل میں وائرل بیماریوں سے طبیعت کو ناساز ہونے سے بچانے کے لیے اور خُوش باش رکھنے کے لیے ہم 7 ایسے قہووں کا ذکر کریں گے جو موسمی  بیماریوں کو پیدا ہونے سے روکتے ہیں اور ہر طرح کے موسم میں صحت کو بحال رکھنے میں مدد کرتے ہیں خاص طور پر کرونا کی اس لہر میں ان قہووں کو اپنی روزانہ کی خوراک میں شامل کرنا آپ کی قوت مدافعت کے لیے بہت ضروری ہے۔

نمبر 1 بابونہ کے پُھول کی چائے

C:\Users\Zubair\Downloads\chamomile-829538_1920.jpg
Resim congerdesign tarafından Pixabay‘a yüklendi

قدیم مصر کے دور میں گُل بابونہ کی چائے کو بہت سی بیماریوں کے علاج کے لیے استعمال کیا جاتا تھا اور اب سائنس مانتی ہے کہ اس چائے میں اینٹی اینفلامیٹری اور اینٹی مائیکروبیل خوبیاں شامل ہیں جو بارش کے موسم میں صحت کو برقرار رکھنے میں انتہائی مدد گار ثابت ہوتی ہیں۔

سردی  اور گرمی کے موسم میں کئی وائرل بیماریاں جیسے نزلہ، زکام، کھانسی وغیرہ عام ہوجاتی ہیں اور بابونہ کی چائے قوت مدافعت کو مضبوط بنا کر ان بیماریوں سے بچاتی ہے اور ساتھ ساتھ تھکاؤٹ کو ختم کر کے نیند کو بہتر بناتی ہے جس سے جسم تروتازہ ہوجاتا ہے۔

نمبر 2 گلاب کے پھل کی چائے

File:Rose hips.jpg
Morn the Gorn / CC BY-SA

فضا میں جب وائرل جراثیم موجود ہوںتو ذرہ سی بد احتیاطی گلہ خراب کر سکتی ہے اور ایسے موقع پر گُلاب کے پھل کی چائے قوت مدافعت کو توانا کر کے خراب گلے کو آرام پہنچاتی ہے، اس پھل کی چائے میں کئی وٹامنز خاص طور پر وٹامن اے، بی 3، سی ، ڈی، ای وغیرہ صحت کو چار چاند لگا دیتے ہیں۔

نمبر 3 ادرک کی چائے

C:\Users\Zubair\Downloads\ginger-3966502_1920.jpg
Resim congerdesign tarafından Pixabay‘a yüklendi

موسم کوئی بھی ہوادرک کی چائے صحت کے لیے بیحد مفید ہے لیکن بارش کے موسم میں ادرک کی چائے پینا بہت ضروری ہوجاتا ہے کیونکہ ادرک میں شامل اینٹی وائرل، اینٹی اینفلامیٹری خوبیاں بارش کے موسم کی موسم کی بیماریوں کو ٹھکانے لگا دیتی ہیں اور ادرک کی چائے پیٹ کو صاف کر کے نظام انہظام کو مضبوط بنا دیتی ہے۔

نمبر 4 گرین ٹی

C:\Users\Zubair\Downloads\green-tea-3528474_1920.jpg
Resim apple deng tarafından Pixabay‘a yüklendi

ماہرین گرین ٹی پر اپنی روزانہ کی تحقیقات میں اس چائے کا روز کوئی نیا فائدہ دریافت کرتے ہیں، سبز چائے جسم کے فاضل مادوں کو خارج کرکے جگر پر سے بوجھ کو ختم کرتی ہے اور نظام انہظام کو فعال بنا کر قوت مدافعت کو تقویت دیتی ہے اور    یہ چائے جہاں صحت کے لیے مفید ہے وہاں اس کا دلچسپ ذائقہ طبیعت کو بھی باغ باغ کر دیتا ہے۔

نمبر 5 تُلسی کی چائے

تُلسی کا پودا کسی اکسیر سے کم نہیں خاص طور بہت سی دائمی بیماریوں جن میں دل، شوگر، ہائی بلڈ پریشر وغیرہ سر فہرست ہیں کو تُلسی کا پودا ٹھیک کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے اور سردی اور گرمی کے موسم میں تلسی کے پتوں کی چائے موسم سے پیدا ہونے والی بیماریوں کو قریب نہیں پھٹکنے دیتی۔

نمبر 6 پودینے کا قہوہ

پاکستان میں گرمی کے موسم میں ہسپتالوں میں ایمرجنسی لگائی جاتی ہے تاکہ پیٹ کے امراض میں مُبتلا مریضوں کو فوری علاج ہو سکے، سردی  کے موسم میں ڈائریا کے ساتھ، اُلٹی، متلی، پیٹ درد جیسی بیماریاں بھی عام ہوتی ہیں اور پودینے کا قہوہ پیٹ کو صاف کر کے ان بیماریوں کے جراثیموں کو سر اُٹھانے سے پہلے ہی ختم کر دیتا ہے۔

نمبر 7 بلیک چائے

ہمارے گھروں میں عام استعمال ہونے والی کالی پتی کی چائے بھی اپنے اندر بیمشار خُوبیاں رکھتی ہے اور جہاں ہمارے ایمیون سسٹم کو طاقتور بناتی ہے وہاں گلے کو ٹکور کر کے گلے کو صاف کو کرتی ہے اور طبیعت کی سُستی کو ختم کرکے موسم کا مزہ دوبالا کرتی ہے۔

نوٹ: اوپر دئیے گئے قہووں میں چینی کا استعمال نقصان دہ ہے آپ ان قہووں میں چینی کی بجائے گُڑ اور شہد کا استعمال کر سکتے ہیں۔

Featured Image Preview Credit: urbanfoodwarrior , Flicker